بھارت کان کھول کر سن لے اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے، وزیراعظم

بھارت کان کھول کر سن لے اینٹ کا جواب پتھر سے دیں گے، وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کشمیریوں پر جتنا بھی ظلم کر لے وہ کبھی کامیاب نہیں ہو گا۔

آزاد کشمیر کے دارالحکومت مظفر آباد میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ میں نے دنیا میں کشمیر کا سفیر بننے کا فیصلہ اس لئے کیا کہ میں ایک پاکستانی، ایک مسلمان اور ایک انسان ہوں، چالیس دن سے مقبوضہ کشمیر کے بھائی، بہنیں کرفیو میں ہیں- وزیراعظم کا کہنا تھا کہ خاص طور پر نریندر مودی کو یہاں سے پیغام دینا چاہتا ہوں کہ ایک بزدل انسان ہی کشمیریوں پر ظلم کرسکتا ہے، نریندر مودی نے کشمیریوں کو 40 دن سے گھروں میں بند کر رکھا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ مودی کشمیریوں پر جتنا مرضی ظلم کر لے کبھی کامیاب نہیں ہو گا کیونکہ کشمیر کے عوام اُن کے ساتھ نہیں ہیں۔ ہندو انتہا پسند جماعت آر ایس ایس کی تاریخ بتاتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ سب کو پتہ ہونا چاہیئے کہ مودی بچپن سے آر ایس ایس کا ممبر ہے اور آر ایس ایس وہ جماعت ہے جس کے اندر مسلمانوں کے لئے نفرت بھری ہوئی ہے، اس جماعت کے بنانے کا مقصد صرف یہ تھا کہ ہندوستان صرف ہندوؤں کے لئے ہے، مسلمانوں، سکھوں، عیسائیوں اور دیگر لوگوں کے لئے یہاں کوئی جگہ نہیں ہے۔

عمران خان نے کہا کہ دنیا کے 58 ممالک نے پاکستانی مؤقف کی تائید کی کہ کشمیر میں لوگوں پر ظلم ہو رہا ہے، 50 سال میں پہلی بار کشمیر کا مسئلہ سلامتی کونسل میں اٹھا، او آئی سی نے بھی بھارت سے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو اٹھانے کا مطالبہ کیا، امریکی سینیٹرز نے صدر ٹرمپ کو خط لکھا ہے کہ آپ کشمیر کے معاملے میں مداخلت کریں، برطانیہ کی پارلیمنٹ میں بھی پہلی دفعہ کشمیر پر بات ہوئی۔

ان کا کہنا ہے کہ جو کشمیر کے لوگ چاہتے ہیں وہ ہمیں منظور ہے، کشمیریوں کو اپنے فیصلے کرنے کا حق حاصل ہے، کشمیر کا مسئلہ اقوام متحدہ اور سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق حل ہونا چاہیئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں