چینی حکومت کی روزگار کے مواقعوں میں مستحکم اضافے کے لئے بھر پور کوشش!

گزشتہ ماہ کے اختتام پر چینی کمیونسٹ پارٹی کی مرکزی کمیٹی کے سیاسی بیورو نے رواں سال کی دوسری ششماہی میں معاشی ترقی کے حوالے سے اجلاس کا اہتمام کیا۔ اس اجلاس میں روز گار کے مواقعوں کی فراہمی پر زور دیا گیا اور روز گار کے مواقعوں میں اضافے کے لئے اقدامات اٹھانے کے حوالے سے مختلف سرکاری اداروں نے دس نکات پر مشتمل ایک مشترکہ دستاویز پیش کی۔ مذکورہ دستاویز کے مطابق نئی توانائی کے شعبے میں ترقی، روایتی صنعتوں کی ترتیب نو، زرعی سپلائی سائڈ کے ڈھانچے میں اصلاحات، دیہات میں ذاتی کاروبار کی حمایت اور دیہی محنت کشوں کی مختلف شعبوں میں منتقلی کے ذریعے روز گاروں کے مواقعوں میں اضافہ کیا جائے گا۔ یاد رہے کہ رواں سال کی پہلی ششماہی میں چین کے شہروں اور قصبوں میں نئے روز گاروں کے مواقعوں میں پچہتر لاکھ بیس ہزار کا اضافہ ہوا ہے جس میں پچھلے سال کے اسی مدت کے مقابلے میں روزگار حاصل کرنے والوں کی تعداد میں ایک لاکھ ستر ہزار افراد کا اضافہ ہوا ہے۔ روز گار کے مواقعوں میں اضافہ ہونے کے ساتھ ساتھ روز گار کے ڈھانچے میں بھی بہتری آئی۔ اس کے علاوہ لوگوں کے تنخواہیں بھی بڑھ رہی ہیں جبکہ بے روز گاری کی شرح بھی کم ہوئی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں

eighteen − 7 =